لاہور:
محکمہ داخلہ پنجاب کی اجازت کے بعد سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحقیقات کیلیے قائم جے آئی ٹی سابق وزیراعظم نوازشریف کا بیان قلمبند کرنے کیلیے آج کوٹ لکھپت جیل جائے گی۔

اے ڈی خواجہ کی سربراہی میں جے آئی ٹی ارکان نوازشریف سے سوالات کریں گے۔ جے آئی ٹی نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کو بھی آج طلب کر رکھا ہے۔ شہبازشریف کی جانب سے جے آئی ٹی کو اپنا تحریری بیان بھجوایا گیا تھا تاہم جے آئی ٹی ممبران نے اسے مسترد کرتے ہوئے کہاہے کہ تحریری بیان بھجوانے کی کوئی قانونی حیثیت نہیں۔