واشنگٹن:
وزیرخزانہ اسد عمرکا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ اصولی اتفاق ہوگیا ہے پروگرام جلد شروع ہوگا جب کہ پروگرام سے پاکستانی معیشیت میں بہتری آئے گی۔

وزیرخزانہ اسد عمرنے امریکا میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ کچھ لوگوں کے سبب آئی ایم ایف کے پاس جانے پرمجبورہوئے ہیں، پیپلزپارٹی اور(ن) لیگ کی حکومتوں کوبھی آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا تھا، آئی ایم ایف کے ساتھ اصولی اتفاق ہوگیا، پروگرام جلد شروع ہوگا جب کہ آئی ایم ایف کا مشن اگلے چند روزمیں پاکستان کا دورہ کرے گا۔

وزیرخزانہ نے کہا کہ پاکستان میں آئی ایم ایف کے ساتھ تکنیکی تفصیلات طے کی جائیں گی، آئی ایم ایف کی شرائط سے پہلے بنیادی تبدیلیاں کی جاچکی ہیں، آئی ایم ایف کے ساتھ پروگرام جلد مکمل ہوجائے گا جب کہ پروگرام سے پاکستانی معیشیت میں بہتری آئے گی۔

 

وزیرخزانہ نے کہا کہ پاکستان میں اسٹرکچرکی سطح پرکچھ چیزیں غلط ہیں، کرنٹ اکاؤنٹ اورتجارتی خسارے میں کمی آرہی ہے، قلیل مدتی فاننسنگ کا بھی انتظام کرلیا، پاکستان کچھ عرصے سے ادائیگیوں کے توازن کے بحران سے دوچارہے، حکومت ڈھانچہ جاتی اصلاحات پرکام کرہی ہے۔

وزیرخزانہ نے اپنے استعفے سے متعلق زیرگردش باتوں سے متعلق کہا کہ وزیراعظم کے بغیرجب بھی بیرون ملک جاتا ہوں تو ایسی باتیں کی جاتی ہیں، جن میں کوئی سچائی نہیں، میں کہیں نہیں جارہا، وزیراعظم نے کہا تھا کہ پاکستان کو تمہاری ضرورت ہے۔