اسلام آباد:
دہشت گردی کے خاتمے کیلیے پاکستان نے ایک اوربڑا قدم اٹھاتے ہوئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی پابندیوں سے متعلق قرارداد 1267 پرعملدرآمد کیلیے رہنما اصول جاری کردیے ہیں۔

دفتر خارجہ کے ترجمان کے مطابق سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے دفتر خارجہ میں ایک باضابطہ تقریب میں پالیسی گائیڈ لائنز جاری کی ہیں، رہنما اصول اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں قومی کمیٹی نے تیار کیے ہیں، اقوام متحدہ کی قرارداد 1267 کے تحت القاعدہ اور داعش جبکہ 1988کے تحت طالبان پر پابندیوں سے متعلق تادیبی اقدامات کیے گئے تھے۔

سیکریٹری خارجہ نے کہا کہ سب سے زیادہ جانی ومالی نقصان اٹھانے کے باوجود پاکستان نے بے مثال قومی عزم، اجتماعی دانش وقربانی اورمستقل جدوجہد سے دہشت گردی کا پانسہ پلٹ دیا۔ دہشت گردی کے عفریت کے خلاف قوم کا اجتماعی طرزعمل، سکیورٹی فورسز اوردیگر اداروںکی موثراور جامع حکمت عملی کارگر ثابت ہوئی۔ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جس طرح کامیابیاں حاصل کی ہیں اسکی مثال ملنا مشکل ہے۔

 

تہمینہ جنجوعہ نے کہا کہ اقوام متحدہ کے چارٹر سات کے تحت لاگو پابندیوں سے متعلق سلامتی کونسل کی قراردادوں کے موثر اطلاق کو بھی یقینی بنایا گیا، پالیسی گائیڈلائنزکی موجودگی میں تمام فریقین کو مزید موثر انداز میں اقوام متحدہ کی نافذکردہ پابندیوں پر عملدرآمد کرانے میںمدد ملے گی۔