واشنگٹن: امریکا نے کہا ہے کہ پاکستان میں اس کے سفارتکاروں کے ساتھ برے سلوک کیا جارہا ہے اور اس کی اقتصادی امداد کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

امریکا نے ایک طرف تو واشنگٹن میں پاکستانی سفیروں پر پابندیاں لگاتے ہوئے ان کی نقل و حرکت محدود کردی ہے تاہم الٹا پاکستان میں تعینات اپنے سفارتکاروں سے برے سلوک کا واویلا شروع کردیا ہے۔

بجٹ سے قبل خارجہ امور کمیٹی کو بریفنگ میں امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے ڈومور کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں امن کا انحصار دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کے خاتمے سے متعلق پاکستان کی آمادگی پر ہے، پاکستان پناہ گاہوں اور دہشت گردی پر اکسانے والوں کے خلاف کارروائی کرے۔