کراچی:  پاکستان اسٹاک ایکسچینج میںمسلسل چوتھے روز جمعہ کو بھی مندی کے بادل چھائے رہے جس کے نتیجے میں کے ایس ای 100 انڈیکس مزید 121 پوائنٹس کی کمی سے 41742 پوائنٹس کی سطح پرآگیا۔

کاروباری ہفتے کے آخری روز جمعہ کو ٹریڈنگ کا آغاز مثبت زون میں ہوا اور ابتدائی اوقات میں حصص کی نچلی سطح پر آئی قیمتوں پر خریداری کے باعث محدود پیمانے پر تیزی دیکھنے میں آئی جس کے نتیجے میں 42000 کی نفسیاتی حد بحال ہوگئی لیکن بعد ازاں ایک بار پھر حصص کی فروخت کا رجحان شروع ہوا جس کے نتیجے میں مندی چھاگئی اور کے ایس ای100انڈیکس 42000 کی نفسیاتی حد کھو بیٹھا اور 41626 کی نچلی سطح پر جاپہنچا تاہم دوسرے ٹریڈنگ سیشن میں ریکوری آنے سے مذکورہ نچلی سطح برقرار نہ رہ سکی لیکن مجموعی طور پر مندی کے اثرات غالب رہے اور مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس 121.28 پوائنٹس کی کمی سے 41742.24 پوائنٹس پر بند ہوا۔

اسی طرح کے ایس ای 30 انڈیکس 118.01 پوائنٹس کی کمی سے 20490.67 پوائنٹس، کے ایم آئی 30 انڈیکس 311.80 پوائنٹس کمی سے 70817.42 پوائنٹس پر بند ہوا البتہ کے ایس ای آل شیئر انڈیکس میں 8.72 پوائنٹس کا معمولی اضافہ ہوا جس سے مذکورہ انڈیکس 30653.83 پوائنٹس پر بند ہوا۔

 

گزشتہ روزمجموعی طور پر367کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہواجن میں سے 130کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں اضافہ، ہوا لیکن اس کے مقابلے میں215کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی ہوئی اور 22 کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔

تعداد کے لحاظ سے بیشترکمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی لیکن مالیت کے لحاظ سے مہنگے شیئرز کی خریداری سے قیمتیں بڑھنے کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں 2 ارب 78 لاکھ روپے سے زائدکا اضافہ ہوا جس سے سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت 86 کھرب 77 ارب 98 کروڑ 36 لاکھ روپے ہوگئی۔

کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے گزشتہ روز صرف 15 کروڑ 98 لاکھ 44 ہزار شیئرز کا لین دین ہوا جو جمعرات کے مقابلے میں 3 کروڑ 16 لاکھ 74 ہزار شیئرز کم ہیں۔ قیمتوں میںاتار چڑھاؤ کے لحاظ سے یونی لیور فوڈزکے حصص سرفہرست رہے جس کے حصص کی قیمت 243 روپے اضافے سے 7499 روپے اور فلپ مورس کے حصص کی قیمت 153.42 روپے اضافے سے 3554 روپے پر بند ہوئی۔

نمایاں کمی کولگیٹ پامولو کے حصص میں ریکارڈکی گئی جس کے حصص کی قیمت 152 روپے کمی سے 2893 روپے اور رفحان میظ کے حصص کی قیمت 149روپے کمی سے 7800 روپے پر بند ہوئی۔

گزشتہ روزیونٹی فوڈز کی سرگرمیاں 1 کروڑ 4 لاکھ شیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں جب کہ دیگر کمپنیوں میں اینگرو فرٹیلائزر، بینک آف پنجاب، ورلڈ کال ٹیلی کام، لوٹے کیمکل، ٹی آر جی پاکستان، اینگرو فرٹیلائزر، نیمر ری سنز، ایگری ٹیک لمیٹڈ اور شبیر ٹائلز کے حصص کا نمایاں کاروبار ہوا۔ اسٹاک ماہرین کے مطابق اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں اہم فیصلوں کے تناظر میں آئندہ دنوں بھی اسٹاک مارکیٹ میں دباؤ برقرار رہنے کا امکان ہے۔