نئی دلی:
بالی ووڈ کنگ شاہ رخ خان کے خلاف سکھوں کے جذبات مجروح کرنے پر شکایت درج کرادی گئی ہے۔

بالی ووڈ کے بادشاہ شاہ رخ خان اپنی فلم’زیرو‘کا ٹریلر ریلیز ہوتے ہی مشکل کا شکار ہوگئے، بھارت میں سکھوں نے شاہ رخ خان اور ’زیرو‘ کے ہدایت کار آنند لال رائے کے خلاف مذہبی جذبات مجروح کرنے پر  پولیس میں شکایت درج کرائی ہے۔

دراصل فلم ’زیرو‘کے پوسٹر اورٹریلر میں شاہ رخ خان کو سکھوں کی کرپان پہنے ہوئے دکھایا گیا ہے، دلی کے سکھ گردوارے کی انتظامی کمیٹی کے جنرل سیکریٹری منجیندر ایس سرسا نے شاہ رخ خان اورآنند لال رائے کے خلاف شکایت درج کراتے ہوئے کہا ہے کہ شاہ رخ خان نےٹریلر اور پوسٹر میں جس طرح کرپان کو ایک عام چاقو کی طرح پہنا ہوا ہے اس سے سکھوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

 
منجیندر ایس سرسا نے فیس بک پر شاہ رخ خان کو کرپان غلط انداز میں پہننے پر شرم دلاتے ہوئے کہا ہے کہ کنگ خان نے کرپان کو ایک عام چاقو کی طرح استعمال کرکے سکھ کمیونٹی کو چھوٹا دکھایا ہے جس سے ہمارے جذبات مجروح ہوئے ہیں اس کے ساتھ ہی انہوں نے شاہ رخ خان اورفلم کی پروڈیوسر گوری خان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوراً پوسٹر اور ٹریلر سے یہ سین ہٹادیں اور اگر ایسا نہ کیا گیا تو ہمیں فلم کی ٹیم کے خلاف قانونی ایکشن لینا پڑے گا۔

واضح رہے کہ شاہ رخ خان، کترینہ کیف اور انوشکا شرما کی فلم ’زیرو‘ یکم دسمبر کو ریلیز کی جائے گی۔