لاہور:
سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ اورنج لائن قومی خزانے پر بوجھ ہے اور حکومت اس کی متحمل نہیں ہو سکتی۔

لاہور میں سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان نے اورنج لائن ٹرین منصوبے کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اورنج لائن ٹرین خزانے پر بوجھ ہے لیکن اسے مکمل کرنے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں، شاہانہ فیصلے کرنے والوں نے پنجاب کے عوام کے ساتھ ظلم کیا، 10 ارب روپے ٹرین کے صرف ماہانہ اخراجات کیلئے درکار ہیں، پنجاب حکومت 120 ارب روپے سالانہ کے بوجھ کی متحمل نہیں ہو سکتی۔

سینئر وزیر پنجاب نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک ایسے منصوبے کسی طور نہیں چلا سکتے، بھاری سبسڈی پنجاب حکومت کے بس کی بات نہیں، موجودہ حکومت ہر منصوبے کا حقائق کی روشنی میں جائزہ لے رہی ہے، منصوبے میں تاخیر کی ذمہ دار سابقہ حکومت ہے، اب کوشش ہے کہ خزانے کو کم سے کم نقصان ہو، خالی خزانے کے ساتھ ایسے چونچلوں کو کیسے چلایا جا سکتا ہے؟

 

عبدالعلیم خان کا کہنا تھا کہ اورنج لائن ٹرین کا باقی ماندہ کام جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے، ٹرین اسٹیشن مختلف نجی اداروں اور بینکوں سے منسلک ہوں گے، سالانہ اشتہاری مہم کے ذریعے بھاری رقوم حاصل ہوں گی۔