499

آیت اللہ خامنہ ای نے بھارت کو خبردار کردیا

تہران: ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے دہلی میں مسلم کش فسادات پر مودی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور معاملے کو سنجیدگی سے حل کرنے پر زور دیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایرانی سپریم لیڈر نے ٹوئٹ کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ بھارتی حکومت ہندو شدت پسندوں کو مسلمانوں کے قتل عام سے روکے۔

آیت اللہ خامنہ ای نے مودی سرکار کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے خبردار کیا کہ مسلمانوں کا قتل عام نہ رکا تو اسلامی دنیا سے بھارت کے تعلقات ختم ہوجائیں گے۔

https://twitter.com/khamenei_ir/status/1235534356363517955?ref_src=twsrc%5Etfw%7Ctwcamp%5Etweetembed%7Ctwterm%5E1235534356363517955&ref_url=https%3A%2F%2Furdu.arynews.tv%2Findian-govt-should-confront-extremist-hindus-irans-supreme-leader-criticises-delhi-riots%2F

خیال رہے کہ اس سے قبل ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے کہا تھا بھارت میں تمام قومیتوں سے اچھا سلوک ہونا چاہیے، بھارت سمجھ سے باہر مجرمانہ ذہنیت کو پنپنے سے روکے۔

ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا ایران صدیوں سے بھارت کا دوست رہا ہے، بھارت میں تمام قومیتوں سے اچھا سلوک ہونا چاہیے، بھارت سمجھ سے باہر مجرمانہ ذہنیت کو پنپنے سے روکے، آگے کا راستہ پرامن مذاکرات اور قانون کی حکمرانی ہے۔

واضح رہے کہ دہلی میں مسلم کُش فسادات کے بعد خوف کی فضا چھائی ہوئی ہے۔ نظام زندگی مفلوج اور لوگ گھروں میں محصور ہیں، نئی دہلی میں ہلاکتوں کی تعداد تقریباً 50 ریکارڈ کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں