390

غیرقانونی بھرتیوں کا کیس، سابق وزیراعظم کو بری کردیا گیا

اسلام آباد : احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کو گیپگو میں غیرقانونی بھرتیوں کے کیس میں بری کردیا، عدالت نے جرم ثابت نہ ہونے پر راجہ پرویزاشرف سمیت8 افسروں کو بری کیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم اور پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماراجہ پرویز اشرف کیخلاف گیپگومیں غیرقانونی بھرتی کیس کی سماعت ہوئی۔

احتساب عدالت کے جج امجد نذیر چودھری نے گیپکوغیرقانونی بھرتیوں کےکیس کافیصلہ سنایا، فیصلے میں عدالت نے سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف سمیت تمام ملزمان کوبری کردیا۔

یہ بھی پڑھیں:

عمرہ ادائیگی سے واپسی پر خوف ناک حادثہ، 5 افراد جاں بحق

خیال رہے نیب نے گیپکو میں غیرقانونی بھرتیوں کاریفرنس 2016 میں دائرکیا تھا، ریفرنس میں راجہ پرویزاشرف سمیت 8 ملزمان کو نامزد تھے۔

احتساب عدالت کے فیصلے کے بعد سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا بریت کی درخواست منظورہونےپرخوش ہوں، اللہ کی مہربانی سے آج ہمیں انصاف مل گیا۔

راجہ پرویزاشرف کا کہنا تھا کہ ایک ایسے مقدمے میں بری ہوا جس کا کوئی سر پیر نہیں ، پیپلزپارٹی نے ہمیشہ عدالتوں کا احترام کیا ہے، اپنےکیسز پر عدالتوں میں لڑتے ہیں،عدالتوں سے نہیں لڑتے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں