409

8 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والا درندہ گرفتار

پشاور : خیبر پختونخوا کے ضلع ہنگو میں ننھی مدیحہ کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ، ملزم نے اعتراف جرم کرلیا، ملزم بچی کاچاچازاد ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہنگو میں 8 سالہ مدیحہ کے اندھے قتل کا معمہ حل ہوگیا ، پولیس نے مدیحہ کو زیادتی کے بعد قتل کرنے والے ملزم الیاس ولد گل رحمان کو گرفتار کرلیا ہے ، ڈی پی او ہنگو نے بتایا ملزم سے پستول بھی برآمد کرلی گئی ، بچی کاچاچازاد ہے اور اسے کل رات گرفتار کیا گیا۔

ڈی پی او ہنگو کا مزید کہنا تھا کہ ملزم الیاس ولد گل رحمان نے اعتراف جرم کرلیا ہے۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ کےپی نے متاثرہ خاندان کوہرقسم کی معاونت فراہم کرنےکی ہدایت کرتے ہوئے مقامی پولیس کی بروقت اورفوری کارروائی کو سراہا اور کہا مجرموں کو قرار واقعی سزادی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں:

مقبوضہ کشمیر میں عوام مشکلات کا شکار ہیں، برطانوی پارلیمانی ممبر ڈیبی ابراہمس

یاد رہے درندہ صفت شخص نے 9 سالہ بچی کو جنسی حوس کا نشانہ بنانے کے بعد موت کے گھاٹ اتار دیا تھا، ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا، بچی کا گلابھی دبایا گیا اور جسم پر تشدد کے نشانات بھی پائے گئے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ دیگر نمونے لے کر لیبارٹری بھیج دیے گئے ہیں، جس کی حتمی رپورٹ 24 گھنٹےمیں آئےگی۔

دوسری جانب آئی جی خیبرپختونخوا ثناء اللہ عباسی نے بچی کےقتل کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی کوہاٹ اور ڈی پی اوہنگو کو مجرمان کو جلد گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا۔

بعد ازاں ہنگو کے علاقے سروخیل میں9سالہ بچی کے قتل کی ایف آئی آرتھانہ دوآبہ میں درج کرلی گئی، پولیس کا کہنا تھا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کےبعدزیادتی کی دفعہ بھی شامل ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں