105

ایران میں کرونا وائرس کا پھیلاؤ ، عالمی ادارہ صحت نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

نیویارک : ایران میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر عالمی ادارہ صحت نے خطرےکی گھنٹی بجادی، عالمی ادارہ صحت کے سربراہ کا کہنا ہے ایران میں کرونا وائرس پر قابو پانے کے امکانات کم ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق عالمی ادارہ صحت کےسربراہ ٹیڈروس نے ایران میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرونا وائرس کےایسے کیسز پر تشویش ہے، جن کا چین سے براہِ راست یا دیگر تصدیق شدہ کیسز سے کوئی واضح تعلق نہیں ہے۔

ٹیڈروس کا کہنا تھا کہ ایران میں کرونا وائرس کی تصدیق کے بعد قابو پانے کے امکانات کم ہوگئے، ایران میں ہونے والی اموات اور انفیکشن کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے۔

خیال رہے یران میں کروناوائرس سےاموات کی تعداد8ہوگئی جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد43 تک جا پہنچی ہے ، ترجمان وزارت صحت نےخدشہ ظاہرکیا ہے کہ قم میں کام کرنےوالے چینی مزدوروں کی وجہ سے وائرس پھیل سکتا ہے جبکہ ایرانی وزارت صحت کا کہنا ہے کرونا وائرس ملک میں پھیل رہا ہے، شہری بہت زیادہ لوگ احتیاط کریں۔

یہ بھی پڑھیں:پاکستان نے دہشت گردی کیخلاف فرنٹ لائن اسٹیٹ کا کردار ادا کیا، آرمی چیف جنرل باجوہ

ایران نے اپنے تمام سرحدی علاقوں اور متاثرہ علاقوں میں ایمرجنسی نافذ کردی ہے اور محکمہ صحت کے ڈاکٹرزاور عملہ کو الرٹ کردیا ہے۔

چودہ ایرانی شہروں میں تعلیمی ادارے اور سنیما، سب ویز، کیفے اور فوارے تک بند کر دیئے گئے ہیں جبکہ قم میں تمام ترمذہبی اجتماعات پر پابندی لگا دی گئی ہے.

غیرملکی میڈیاکےمطابق ایران میں بڑھتی ہوئی مریضوں کی تعدادپڑوسی ممالک کومتاثرکرسکتی ہے۔ایران سے متحدہ عرب امارات واپس جانےوالےجوڑے میں کوروناوائرس کی تصدیق ہوئی، قم سے لبنان پہنچنے والی پینتالیس سالہ خاتون کورونا وائرس سے متاثرتھیں۔

سعودی عرب نےاپنےشہریوں اورملک میں مقیم غیرملکیوں کے ایران کا سفر کرنے پر پابندی لگا دی ہے جبکہ عراق اورترکی نےایران کے ساتھ سرحدیں بند کردیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں