143

سندھ میں سخت لاک ڈاؤن، میڈیکل اسٹورز سمیت تمام دکانیں بن

کراچی: سندھ حکومت نے آج صبح کھلنے والی کریانہ، سبزی، پھل اور میڈیکل کی دکانوں کو بھی بند رکھنے کا اعلان کردیا۔

سندھ حکومت کا 3 روزہ ’’محفوظ دن‘‘ کا آغاز ہوگیا اور دوپہر تین بجے تک مکمل لاک ڈاؤن ہے جس کے دوران تمام تجارتی سرگرمیاں بند ہیں۔ جگہ جگہ رکاوٹیں کھڑی کرکے تمام سڑکیں بھی بند کردی گئیں جس کے نتیجے میں گھروں سے باہر نکلنے والے شہری پھنس گئے اور ٹریفک جام ہوگیا۔

صوبائی وزیر اطلاعات ناصر حسین شاہ کے مطابق دوپہر تین بجے تک میڈیکل اسٹور، دودھ، بیکری، کریانہ، سبزی اور پھلوں کی دکانیں بند رہیں گی اور ہر قسم کے کاروبار پر پابندی ہوگی جبکہ شہریوں کو نقل و حرکت کی بھی اجازت نہیں ہوگی۔
اس سے قبل جمعہ کے دن صبح 8 بجے سے دوپہر 12 تک اور سہ پہر ساڑھے تین بجے سے شام ساڑھے چھ بجے تک کاروبار کی اجازت ہوتی تھی۔ یعنی دوپہر 12 سے 3 بجے تک مکمل لاک ڈاؤن ہوتا تھا تاہم اس بار سخت لاک ڈاؤن کا دورانیہ بڑھادیا گیا ہے۔

یوم علی کا مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد

داماد رسول ؐ، فاتح خیبر، خلیفہ چہارم حضرت علی ؓ کا یوم شہادت آج مذہبی عقیدت و احترام کیساتھ منایا جا رہا ہے۔ کراچی میں یوم علی کا مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد ہوگیا۔

جلوس پاک حیدری اور بوتراب اسکاؤٹس کے حصار میں اپنے روایتی راستوں سے گزرتے ہوئے کھارادر میں حسینیہ ایرانیاں امام بارگاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوگا۔

مرکزی جلوس کی سیکیورٹی کے لیے ایم اے جناح روڈ ، پریڈی اسٹریٹ ، تبت سینٹر ، نمائش چورنگی ، تین ہٹی اور کھارادر سمیت ملحقہ سڑکوں اور گلیوں کو کنٹینرز ، ٹینکرز اور قناعتیں لگا کر سیل کر دیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں