ابوظبی:
پاکستان نے ٹیسٹ کرکٹ میں رنز کے اعتبار سے اپنی سب سے بڑی فتح سمیٹ لی جب کہ محمد عباس نے ریکارڈز بکس کو الٹ پلٹ دیا۔

ابوظبی میں گرین کیپس 373 رنز سے سرخرو ہوئے، یوں ٹیم نے رنز کے اعتبار سے سب سے بڑی فتح حاصل کی۔ 4 سال قبل اسی وینیو پر آسٹریلیا کو ہی 356 رنز سے ہرایا تھا، کینگروز کی رنز کے لحاظ سے یہ چوتھی بڑی ناکامی ہے، رواں سال مارچ میں جنوبی افریقہ نے 492رنز سے شکست دی تھی۔

محمد عباس 2006 کے بعد پہلی بار ٹیسٹ میں 10 شکار کرنے والے پیسر بنے، 12سال قبل محمد آصف نے سری لنکا کیخلاف کینیڈی میں یہ کارنامہ سرانجام دیا تھا،عباس یو اے ای میں کسی ایک ٹیسٹ میں 10 پلیئرز کو آؤٹ کرنے والے پہلے فاسٹ بولر بھی ثابت ہوئے، جنید خان نے یہاں 2013 میں سری لنکا کی 8وکٹیں حاصل کی تھیں۔

 

محمد عباس کسی ایک سیریز میں سب سے کم اوسط کے ساتھ 15یا زائد شکارکرنے والے پاکستانی بولر بھی بن گئے، پیسر نے 10.58کی اوسط سے 17وکٹیں لیں، محمد آصف نے 2006 میں 10.67کی ایوریج سے اتنے کھلاڑیوں کو ٹھکانے لگایا تھا۔

محمد عباس گزشتہ 100سال میں کسی بھی بولر کی جانب سے بہترین اوسط سے 50یا زائد وکٹیں حاصل کرنے والے بولر بھی بنے ہیں،پیسر نے آسٹریلیا کے خلاف ایک میچ میں 10 وکٹیں لینے والے پانچویں پاکستانی بولر کے طور پر اپنا نام درج کرایا،اس سے قبل فضل محمود، عمران خان، سرفراز نواز  اور وسیم اکرم یہ کارنامہ سرانجام دے چکے ہیں۔

دوسری جانب آسٹریلوی بیٹسمینوں شان مارش اور مچل مارش نے ناکامیوں کی تاریخ رقم کردی، دونوں کی کُل ملاکر اوسط 3.50 ہے، یہ ٹاپ 6میں شامل 2کینگرو بیٹسمینوں کی گزشتہ 100سال میں ناقص ترین کارکردگی رہی۔

واضح رہے کہ آسٹریلیا کی ایشیا میں ناکامیوں کا سلسلہ دراز ہوگیا، کینگروز نے آخری سیریز 2011 میں میزبان سری لنکا کیخلاف جیتی تھی، اس کے بعد 17 میں سے 13 ٹیسٹ میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔