409

سندھ ہائی کورٹ کا کراچی میں شادی ہال گرانے پر فوری حکم امتناع دینے سے انکار

کراچی : سندھ ہائی کورٹ نےنارتھ ناظم آبادکے شادی ہال گرانے پر حکم امتناع جاری کرنے سے انکار کردیا اور کہا آنکھیں بندکرکےحکم امتناع نہیں دےسکتے، قانونی حیثیت کے دستاویز آنے کے بعد ہی کیس سنیں گے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں تجاوزات کے خلاف آپریشن سےمتعلق کیس سماعت ہوئی، عدالت نے شادی ہال گرانے سے روکنے کی فوری سماعت سے متعلق درخواست مسترد کرتے ہوئے نارتھ ناظم آبادکےشادی ہال گرانےپرحکم امتناع جاری کرنےسےانکار کردیا۔

جسٹس حسن اظہررضوی نے کہا آنکھیں بندکرکےحکم امتناع نہیں دےسکتے، پہلےدستاویزات لائیں کہ شادی ہال قانونی حیثیت رکھتاہے، جس پر نہال ہاشمی ایڈووکیٹ کا کہنا تھا کہ میرےموکل کاشادی ہال گرایاجارہاہے، شادی ہال کےقانونی دستاویزات موجودہیں۔

یہ بھی پڑھیں:لاہور اور گوجرانوالہ کے درمیان نئی ٹرین چلانے کا اعلان

عدالت نے کہا کہ جن قانونی دستاویزکاذکرکررہےہیں وہ فائل میں تونہیں لگائے، پہلےقانونی حیثیت کےدستاویزات لائیں پھرکچھ کریں گے، سپریم کورٹ نے غیر قانونی تعمیرات گرانے کاحکم دےرکھاہے، ہماری بھی حدودوقیودہیں،نوٹس جاری نہیں کریں گے۔

وکیل کا کہنا تھا کہ عدالت شادی ہال گرانے سےروک دے،دستاویزپیش کردیں گے ، جس پر عدالت نے کہا شادی ہال کی قانونی حیثیت کےدستاویزآنےکےبعدہی کیس سنیں گے۔

خیال رہے سپریم کورٹ نے کراچی میں غیر قانونی  تجاوزات کے خلاف آپریشن کا حکم دے رکھا ہے ،چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا تھا جو غیر قانونی قبضہ کرےگاسب گرےگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں